YouVersion Logo
Search Icon

زبُور 139

139
خُدا کی ہمہ دانی اور نِگہداشت
مِیر مُغنّی کے لِئے داؤُد کا مزمُور۔
1اَے خُداوند! تُو نے مُجھے جانچ لِیا اور پہچان لِیا۔
2تُو میرا اُٹھنا بَیٹھنا جانتا ہے۔
تُو میرے خیال کو دُور سے سمجھ لیتا ہے۔
3تُو میرے راستہ کی اور میری خواب گاہ کی چھان بِین کرتا ہے
اور میری سب روِشوں سے واقِف ہے۔
4دیکھ! میری زُبان پر کوئی اَیسی بات نہیں
جِسے تُو اَے خُداوند! پُورے طَور پر نہ جانتا ہو۔
5تُو نے مُجھے آگے پِیچھے سے گھیر رکھّا ہے
اور تیرا ہاتھ مُجھ پر ہے۔
6یہ عِرفان میرے لِئے نہایت عجِیب ہے۔
یہ بُلند ہے۔ مَیں اِس تک پُہنچ نہیں سکتا۔
7مَیں تیری رُوح سے بچ کر کہاں جاؤُں
یا تیری حضُوری سے کِدھر بھاگُوں؟
8اگر آسمان پر چڑھ جاؤُں تو تُو وہاں ہے۔
اگر مَیں پاتال میں بِستر بِچھاؤُں تو دیکھ! تُو وہاں بھی ہے۔
9اگر مَیں صُبح کے پر لگا کر
سمُندر کی اِنتہا میں جا بسُوں
10تو وہاں بھی تیرا ہاتھ میری راہنمائی کرے گا
اور تیرا دہنا ہاتھ مُجھے سنبھالے گا۔
11اگر مَیں کہُوں کہ یقِیناً تارِیکی مُجھے چِھپا لے گی
اور میری چاروں طرف کا اُجالا رات بن جائے گا
12تو اندھیرا بھی تُجھ سے چِھپا نہیں سکتا۔
بلکہ رات بھی دِن کی مانِند رَوشن ہے۔
اندھیرا اور اُجالا دونوں یکساں ہیں۔
13کیونکہ میرے دِل کو تُو ہی نے بنایا۔
میری ماں کے پیٹ میں تُو ہی نے مُجھے صُورت بخشی۔
14مَیں تیرا شُکر کرُوں گا کیونکہ مَیں عجِیب و غرِیب طَور سے بنا ہُوں
تیرے کام حَیرت انگیز ہیں۔
میرا دِل اِسے خُوب جانتا ہے۔
15جب مَیں پوشِیدگی میں بن رہا تھا
اور زمِین کے اسفل میں عجِیب طَور سے مُرتّب ہو رہا تھا
تو میرا قالِب تُجھ سے چِھپا نہ تھا۔
16تیری آنکھوں نے میرے بے ترتِیب مادّے کو دیکھا
اور جو ایّام میرے لِئے مقرّر تھے
وہ سب تیری کِتاب میں لِکھے تھے۔
جب کہ ایک بھی وجُود میں نہ آیا تھا۔
17اَے خُدا! تیرے خیال میرے لِئے کَیسے بیش بہا ہیں۔
اُن کا مجمُوعہ کَیسا بڑا ہے!
18اگر مَیں اُن کو گِنُوں تو وہ شُمار میں ریت سے بھی زِیادہ ہیں۔
جاگ اُٹھتے ہی تُجھے اپنے ساتھ پاتا ہُوں۔
19اَے خُدا! کاش کہ تُو شرِیر کو قتل کرے۔
اِس لِئے اَے خُون خوارو! میرے پاس سے دُور ہو جاؤ۔
20کیونکہ وہ شرارت سے تیرے خِلاف باتیں کرتے ہیں
اور تیرے دُشمن تیرا نام بے فائِدہ لیتے ہیں۔
21اَے خُداوند! کیا مَیں تُجھ سے عداوت رکھنے والوں سے عداوت نہیں رکھتا
اور کیا مَیں تیرے مُخالِفوں سے بیزار نہیں ہُوں؟
22مُجھے اُن سے پُوری عداوت ہے۔
مَیں اُن کو اپنے دُشمن سمجھتا ہُوں۔
23اَے خُدا! تُو مُجھے جانچ اور میرے دِل کو پہچان۔
مُجھے آزما اور میرے خیالوں کو جان لے
24اور دیکھ کہ مُجھ میں کوئی بُری روِش تو نہیں
اور مُجھ کو ابدی راہ میں لے چل۔

YouVersion uses cookies to personalize your experience. By using our website, you accept our use of cookies as described in our Privacy Policy

;